96

بٹن

  نعمت اللہ ہراتی لکھتا ہے کہ بٹن بن قیس اپنی ریاضت اور عبادت گزاری کی وجہ سے شیخ بیت کہلاتا تھا اور پٹھان کے نام سے مشہور تھا ۔ اس کے دوبیٹے اشپون اور کجین تھے ۔ ان کی اولاد بٹنی کہتے ہیں ۔ جب کہ اس کی بیٹی کی اولاد اس کے نام سے متی کہلاتی ہے ۔ شیر محمد گنڈاپور کا کہنا ہے کہ اس کے لڑکوں کے نام وڑسپون اور کجین تھے جس سے بٹنی قبیلہ نکلا ہے ۔ 
اس کلمہ کی اصل بٹ ہے ۔ جسے ہند آریائی میں بھٹ پکارا جاتا ہے ۔ بٹ کشمیری قبیلہ ہے ۔ جب بھٹ ہندوں کی ایک ذات ہے ۔ بٹن سے منسوب قبیلہ بٹانی کہلاتا ہے  جسے ڈیرہ جات میں بھٹانی کہتے ہیں ۔ یہ بٹ جسے ہند آریائی میں بھٹ کہتے ہیں اور یہ اندوسیھتک یا چندر بنسی ہیں ۔ یہ کلمہ بٹ اور بھٹ کے علاوہ بھٹی ، بھاٹیا ، بھٹو چھٹہ اور بھٹہ وغیرہ کی شکل میں ملتا ہے اور یہ تمام قبائیل آریا نسل سے تعلق رکھتے ہیں ۔ 

تہذیب و تدوین
عبدلمعین انصاری

اس تحریر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں