56

جلوانی

نعمت اللہ ہروی نے اس کا شجرہ نسب جلوانی بن چار بن شیرانی بن شرف الدین (شرخبون) بن سربنی بن قیس عبدالرشید دیا ہے ۔

قدیم زمانے میں اندوسیتھک (چندر بنسی) وسط ایشیا سے برصغیر تک پھیلے ہوئے تھے ۔ یہ یادو یا جادو کہلاتے تھے اور تاتاری روایات میں ان کا مورث اعلیٰ جلدس بتایا گیا ہے ۔ قدیم ایرانی زبانوں میں ’ل’ استعمال ہوتا تھا اور عربوں کے نفوذ کے بعد ’د’ ل میں بدل گئے ۔ جلوانی اسی جلدس سے مشتق ہے جسے بعد میں افغانوں کے شجرہ نسب میں شامل کرلیا گیا ہے ۔ حقیقت میں اندوسیتھک آریائی ہیں ۔

تہذیب و تدوین
عبدالمعین انصاری

اس تحریر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں