77

جمند

اس قبیلے کا شجرہ نسب جمند بن سربنی بن قیس عبدالرشید ہے ۔ اس کی ایک شکل زمند ہے ۔ کیوں کہ سنسکرت کے ’ج‘ کے علاوہ پشتو کے مشرقی لہجہ میں ’ج‘ کی جگہ مغربی لہجہ میں ’ز‘ استعمال ہوتا ہے ۔

اس کلمہ کا ابتدائی لفظ ’جم‘ ہے اور مند نسبتی کلمہ ہے ۔ جمشید آریاؤں کے مشہور ہیرو کا نام تھا ۔ باختر کے حکمران گشتاسب کا وزیر جاماسب تھا ۔ جس نے سب سے پہلے دین زرتشتی اختیار کیا تھا ۔ چنگیز خان کے وزیر جاما اور جمدق تھے ۔ جمند نام کا ایک ہندو راجہ تھا جس کا عربوں نے ذکر کیا ہے ۔

یہ کلمہ شہروں کے ناموں میں بھی ملتا ہے ۔ جموں کشمیر کا ایک شہر ہے ۔ جام افغانستان کا ایک شہر ہے ۔ جس کی نسبت سے مشہور شاعر مولانا عبدالرحمٰن جامی اور احمد جام مشہور ہوئے ہیں ۔ افغانستان میں زمند اور زمینداور شہروں کے نام ہیں جو اس کلمہ کی شکل ہیں ۔ ویمرے نے دریائے آمو کے کنارے جموکیٹ یا جمیکٹ کا ذکر کیا ہے ۔ جس کے معنی اچھا شہر کے ہیں ۔ پیگل کا کہنا ہے یہ کلمہ جم +کیٹ بمعنی جم کا بنایا ہوا شہر کے ہیں ۔ جب کہ ابولفدا کے مطابق سنسکرت میں یہ کلمہ یاماکوٹ ہے ۔

بالاالذکربحث یہ نتیجہ اخذ کیا جاسکتا ہے یہ کلمہ جم جس کی اور شکلیں ہیں اسے آریائی قوموں نے استعمال کیا ہے اور اس کو شخصیتوں کے علاوہ شہروں اور قبیلوں کے نام رکھے گئے ہیں اور اسے استعمال کرنے والے آریائی ہیں ۔

تہذیب و تدوین
عبدالمعین انصاری

اس تحریر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں