61

دس مہاودیا

یہ دس شکتیاں پاربتی دیوی کے دس بھیانک روپ ہیں ۔ یہ درگا دیوی کی دس تنانترک شکتیاں بھی ہیں ۔ دیوی کے یہی دس روپ ہیں دیوی ، الپسرا یشنی ، شاکنی اور پشاکنی کا نشان ہے ۔ جن نو درگائوں کے نو روپ ہیں وہ بھی پاربتی کے روپ ہیں ۔ شاشتروں کے مطابق ان دس روپ میں کسی روپ کی پوجا سے ہر طرح کی پریشانی اور بیماری ختم ہوجاتی ہے ۔ سری دیوی بھگوت پروان میں ہے کہ شیو سے پاربتی کا بیاہ کروانا پاربتی کے گھر والے نہیں کرنا چاہتے تھے ۔ لیکن پاربتی کے اصرار پر ان کا بیاہ شیو سے ہوگیا ۔ مگر پاربتی کے گھر والے شیو کو پسند نہیں کرتے تھے ۔

ایک دفعہ انہوں نے یگیہ کروایا اور اس میں سب ہی دیوی دیوتاؤں کو بلوایا مگر شیو اور باربتی کو نہیں بلوایا ۔ جس پر باربتی نے شیو سے وہاں جانے کی اجازت مانگی مگر شیو نے کہا بغیر بلوائے جانا درست نہیں ہے ۔ مگر شیو نے اجازت نہیں دی اس پر پاربتی کو غضہ آگیا اور پاربتی سب پہلے کالی کے بھیانک روپ ظاہر ہوئی ۔ اس کے روپ کو دیکھ کر بھولے ناتھ خوف سے کانپنے لگے اور وہاں ڈر کر بھاگنے لگے ۔ شیو جس طرف بھی جاتے ماں انہیں اپنے ایک روپ میں ظاہر ہوکر انہیں روک لیتیں ۔ اس طرح دس سمتموں میں شیو بھاگے اور ہر طرف ایک روپ انہیں روک لیتا ۔ اس طرح دیکھتے دیکھتے ماتا پاربتی دس بھیانک روپوں میں ظاہر ہوئیں اور ہر روپ میں سے آوازیں آتیں کے میں ضرور جائوں کی اور حصہ لوں گی ۔ یہ دس روپ ماتا کے وہی روپ دس مہاودیا روپ کہلائے ۔ اس پر شیو نے اپنا فیصلہ واپس لے لیا اور ماتا شکتی بھاگ لیے اپنے پتا کے پاس چلی گئیں ۔

جب مانا نے اپنے روپ شیو کو دیکھائے تو ان کے نام بھی بتائے ۔ تو شیو ہار کر سامنے آگئے اس پر شیو نے پوچھا کہ اے دیوی یہ سب کیا ہے اور سب کیاہیں ، اس پر ستی نے پتایا سوامی یہ سب میرے روپ ہیں (۱) وہ سیاہ رنگ کی کالی ہے (۲) نیلے رنگ کی تارہ ہے (۳) وہ چھن ماتا ہے (۴) وہ ایشوری ہے (۵) وہ بگلہ مکھی ہے (۶) وہ ماتنگی ہے (۷) وہ اوما متی ہے اور (۸) میں خود بھیروی ہوں (۹) وہ شورشی ہے (۱۰) اور میں پاربتی ہوں اور کائنات میں اس طاقتوں علاوہ میں کچھ نہیں ہے ۔      

تہذیب و تدوین
عبدالمعین انصاری

اس تحریر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں