81

مارونی

لبنان کے مختلف نسلی گروہوں کا مجموعہ جنہوں نے عیسایت قبول کرلی تھی اور اپنے کلسیا کے مربی بزرگ مارون سے منسوب ہوا ۔ یہ ایک متقشف راہب تھا ، جو چوتھی صدی عیسوی کے آخر حصے میں مشہور ہوا 410ء میں اس صحرائی میں وفات پائی جو انطاکیہ اور قورش کے درمیان ہے ۔ اس مذہبی پیشوا کی زندگی کے مستند حالات چند فقروں میں لکھے جاسکتے ہیں ۔ اس معاصر تھیوڈ وایٹ اسفقف نے لکھا ہے کہ مارون نے راہبانہ زندگی کا باغ لگایا ۔ اس بات کی کوئی شہادت نہیں ہے کہ سینٹ مارون یونانی جانتا تھا یا اس نے انطاکیہ میں ہی تعلیم پائی ۔ وہ شامی کلیسا کا رکن تھا جس میں دعا اور نماز میں سریانی زبان استعمال کی جاتی تھی ۔ غالباً یونانی کلیسا کے ساتھ جھگڑا ہوگیا ، جو انطاکیہ اور بیزنطیم میں بڑے زور شور سے جاری رہا ۔

مارون کی وفات کے کچھ عرصہ بعد اس کے مرید افامیہ میں یا اس کے نذدیک منتقل ہوگئے ۔ یہ دریا عاصی پر واقعہ ہے ۔ انہوں نے اپنے پیشوا کی یاد میں ایک خانقاہ تعمیر کرلی ۔ روایت کے مطابق وہ اپنے پیشوا کی باقیات بھی ساتھ لے آئے ، جو بعد ازاں وہاں سے لبنان منتقل کردی ۔ شہنشاہ مارسیانوس نے مارونی خانقاہ میں توسیع کی ۔

افامیہ کے ارد گرد مارونی عقیدے کے لوگوں تعداد میں اضافہ ہوا تو یعقوبیوں سے رقابت اور عدات بڑھی ۔ وہ بھی مارونیوں کی طرح نماز و دعا میں سریانی زبان استعمال کرتے تھے ۔ ۴۵۲ تا ۵۱۷ کے درمیان اس خانقاہ کے تقریباً ساڑھے تین سو راہب یعقوبیوں موت کے گھاٹ اتار دیئے ۔

جسٹین اعظم ۷۲۷ میں تباہ شدہ خانقاہ ازسر نو تعمیر کرائی ۔ شہنشاہ ہرقل بھی اس خانقاہ کا مربی تھا ۔ جو ایرانیوں پر فتوحات کے بعد 628ء میں یہاں آیا تھا ۔ اس نے وحدت ارادہ مسیح کے عقیدے کی حمایت کی ۔ اس سے پیشتر اسے خلاف مذہب سمجھا جاتا تھا ۔

ساتویں صدی کے نصف آخر میں مارونیوں کے یعقوبیوں سے دوبارہ جھگڑے شروع ہوگئے ۔ نتیجے میں مارونی شمالی لبنان منتقل ہوگئے ۔ یہی مقام مستقبل میں مارونیوں کا وطن بنے والا تھا ۔ ان کی اکثریت لبنان میں رہاہیش پزیر ہے اور لبنان کا صدر مارونی ہوتا ہے ۔

تہذیب و تدوین
عبدالمعین انصاری

اس تحریر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں