79

نرک

اساطیری مقام جہاں عذاب دیا جاتا ہے ، یعنی جہنم ۔ لیکن کچھ شارحین کے مطابق یہ معنی (باطنی حقیقت کے مقابلے میں) فقط اصل پر ڈالا گیا پردہ ہے ۔ اصلاً نرک مادے کے کروں میں موجود دنیائیں ہیں ۔ یوں یہ سیاروی سلسلوں کے کرے ہیں ۔ وجہ تسمیہ ان کا بے ہیت غیر مادی کروں کے مقابلے میں مادی ہونا ہے ۔ یہ تمام نرک ایک دوسرے کو تقویت دیتے ہیں ۔ ایک نرک میں مر جانے والا فوراً دوسرے نرک میں جنم لیتا ہے ۔ اس کے بعد تیسرے ، چوتھے اور اسی طرح تمام نرکوں کا عذاب بھگتتا ہے ۔ ہر نرک میں پانسو برس (یہ تعداد ایک بار پھر ادوار اور نئے جنم کو چھپانے کا ایک طریقہ ہے) گزارنا ہوتے ہیں ۔ ان ذوزخوں کا شمار چھ ایسے وجودوں میں ہوتا ہے جن کا احساس کیا جاسکتا ہے اور چونکہ لوگوں کا اپنے لوگوں کا اپنے خیر و شر کے مطابق ان میں سے کسی ایک میں پیدا ہونا بیان کردیا گیا ہے ، چنانچہ صاف پتہ چلتا ہے نرک سے اصل مراد وہ نہیں جو عموماً لیے جاتے ہیں ۔ 

تہذیب و تدوین
عبدلمعین انصاری

اس تحریر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں