classification of human being costs 51

انسانی نسلوں کی درجہ بندیاں

نسلوں کی درجہ بندی کرتے وقت جن امور کا خیال رکھنا چاہیے ۔

(۱) شکل و صورت (۲) زبان (۳) مذہب (۴) رسم و رواج (۵)  دوسری مشابہتیں ۔

شکل و صورت 

برصغیر میں تین اقسام زیاد اہم اور مشہور ہے ۔ آریا ، منگول اور حبشی ۔ آریا وہ ہیں جو کہ اکثر ہندوستانیوں میں ملتی ہیں ۔ گو اس میں گونہ ملاوت ہوگئی ہے ۔ دوسری منگول جو گورگھوں اور تبتی کی ہوتی ہے ۔ یعنی بال سیدھے ، رنگ زرد آنکھیں چھوٹی اور گہری ۔ تیسری ھبشی جو کہ جنوب کے علاقہ میں اور جنگل میں رہنے والوں میں نظر آتی ہے ۔ ان کے ہونٹ موٹے ، ناک پھیلی ہوئی ، مونچھ ڈاھاریاں کم اور بال گھنگریالے ہوتے ہیں ۔

زبان 

اکثر الفاظ ایک زبان سے دوسری زبان میں آجاتے ہیں ۔ لیکن بعض اشیاء کے نام مختلف ہوں تو یہ اس بات کی اہم دلیل ہے کہ یہ عہد قدیم میں الگ زبان و اقوام سے تعلق رکھتے ہیں ۔ ان میں اعداد ، اعضاء کے نام مثلاً ہاتھ ، پاؤں ، ناک وغیرہ ۔ قریبی رشتہ داروں ، سورج ، چاند ، آگ ، پانی اور ضمیریں وغیرہ شامل ہیں ۔ واضح رہے کہ سنسکرت ، پہلوی اور یونانی زبانیں اختلافات کہ باوجود یہ آپس میں نہایت مشابہت رکھتی ہیں ۔ چنانچہ ان سب کو ایک ہی نام آریا کہا گیا ہے اور ان کی یہی تعریف مد نظر ٹہری ۔

مذہب 

اکثر ایسا بھی ہوتا ہے کہ مختلف ملکوں میں ایک جیسی پوجا ، مثلا چاند یا سورج یا شیر کی پرستش ہوتی ہے ۔ یہ اس بات کا ثبوت ہے کہ ان ممالک میں ایک ہی نسل کے لوگ آباد ہیں ۔ کیوں کہ ایسی پرستش سے یکسانی ظاہر ہوتی ہے ۔ غالباً ہند کے دو مذاہب یعنی شیوی و وشنوی دو الگ الگ نسلوں کی دلیل ہیں ۔ شاید وشنوی مذہب شمال کی پیداوار ہے ۔ حالانکہ شیوی مذہب قدیم تر ہے ۔

رسم و رواج 

یہ دلیل کسی نسل کے لیے نہایت اہم ہے ۔ مثلاً آریا یعنی ہندوؤں کی زیادہ تر ذاتیں رسم و رواج کو بہت اہمیت دیتے ہیں اور وطن سے بہت محبت کرتے ہیں ۔ حالانکہ غیر آریائی قومیں اس کے برخلاف ہیں ۔

مشابہت 

واضح رہے الگ الگ جگہوں یا طویل فاصلہ پر رہنے والے ایک قوم یا نسل کے لوگ بہت سے معاملات میں بانسبت جن نسلوں کے درمیان وہ رہتے ہیں آپس میں زیادہ مشابہت رکھتے ہیں ۔ باجود اسے کے جغرافیائی اور وقت کے ساتھ میں بہت سی تبدیلیاں جس میں زبان ، رسوم و رواج اور مذہب مختلف ہوچکے ہوتے ہیں ۔ یہ مشترک معاملات ظاہر کرتے ہیں کہ یہ مشترک نسل سے ہیں اور کئی ہزار سال پہلے ان کے درمیان ہجرت کی وجہ سے جدائی ہوگئی ۔ مثلاً حبشی نسل کے لوگ جو ہند میں اولاد بعض جگہوں پر ملتے ہیں یا ہند کے عام باشندے گو جن زبان اب سنسکرت سے مختلف ہوچکی ہے اور یہ ان پرکھوں کی اولاد ہیں جنہیں آریا کہا جاتا تھا ۔ ان کے آبا ان علاقوں سے آئے تھے جو کہ کابل اور روس کے درمیان واقع ہیں اور اب ہند کے مقامی باشندوں سے مخلوط ہوچکے ہیں ۔

نسل پرستی

دنیا میں ہر جگہ فاتحین اعلیٰ نسل کے معنی جاتے ہیں ، جیسے کے گزشتہ سو سال پہلے تین سو سال تک یوریین یا سفید نسل اعلیٰ کہلاتی ہے ۔ اس طرح مذہبی نقطہ نظر سے مسلمانوں میں سید اور تصوف کے سلسلوں سے تعلق رکھنے والے بھی مقدس اور اعلیٰ سمجھے ۔ فقہ کا ایک فتویٰ ہے کہ جس کے آباء نے اسلام پہلے قبول کیا وہ بھی نسب میں برتر ہیں اس لیے جس مسلمانوں کو دیکھو وہ اپنا تعلق عرب ایران اور توران سے  مالاتا ہے ۔ ہندوؤں میں برہمن مقدس نسل سمجھی جاتی ہے ، انہیں زمین پر دیوتا کہا گیا ہے ، ان کا ہندوؤں کی زندگی میں اس قدر اہم کردار ہے پیدائش سے موت تک قدم قدم پر ان کی رہنمائی لی جاتی ہے ۔

تہذیب و تدوین
عبدالمعین انصاری

اس تحریر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں