61

سہوان

جیمز ٹاڈ کا کہنا ہے کہ کرشن کی ایک رانی کا نام جامبوتی تھا ۔ اس کے بڑے لڑکے کا نام سامبب تھا ۔ سامبب نے دریائے سندھ کے ذیریں اور وسط علاقہ پر حکمرانی اور اسی سے جاریجا قوم نکلی ہے ۔ جو اب مسلمان ہونے کے بعد اپنی نسبت جمشید سے کرتے ہیں ۔ غالب رائے یہی ہے کہ سامبا نگری (مینا نگر) جو یونانیوں کا سامبب ہے ۔ جاریجا نے یہاں سکندر سے مقابلہ کیا تھا جو کہ کرشن کی اولاد سے تھے ۔

یہاں سوال یہ پیدا ہوتا ہے کہ یونانیوں سامبس یا سامبا نگر کا محل وقوع کس مقام پر تھا ۔ جہاں سکندر نے مقامی لوگوں سے لڑائی ہوئی تھی ۔ اس کے لیے ایک تفصیلی بحث کی ضرورت ہے ۔

اس میں کوئی شک نہیں ہے کہ سامبس یا مینانگر وسطہ سندھ کے علاقہ میں واقع تھا ۔ کیوں کے ملی اسھتان (ملتان) کے بعد سامبس (مینا نگر) کے بعد یونانیوں نے اس کا ذکر کیا ہے ۔ اگرچہ ڈاکٹر نبی بخش بلوچ نے اس کا محل وقوع دریائے سندھ کے ڈیلٹا میں بتایا ہے ۔ مگر شواہد اس کی تصدیق نہیں کرتے ہیں اور سکندر سامبس کے بعد پٹیالہ آیا تھا ۔

اگر ہم سامبس کے صوتی اثر پر نظر ڈالیں تو موجودہ سیوہن ہی اس پر پورا اترتا ہے ۔ اس کی قدامت کے بارے میں بہت سی کہانیاں مشہور ہے ۔ خاص کر راجہ بھرتری کی کہانی بہت مشہور ہے ۔ یہ کہانیاں یقناً سیتھیوں کے دور کی ہیں ۔ غالب امکان یہی ہے کہ یہ سیتھی تھے جن کو یونانیوں نے سامبس کردیا اور اس علاقہ کو سامبس کہا ۔ جب کہ سیتھیوں کے وجہ سے سندھ ہندو سیتھا بھی مشہور ہو اور سیتھیوں کی نسبت سے یہ علاقہ یونانیوں کا سامبس جو بعد میں سیستان ، سہوان اور سیوہن کہلایا ۔

اس علاقہ میں سیتھیوں جن کی نمائندگی اب جاٹ کرتے ہیں ۔ مسلمانوں کی آمد سے پہلے اس علاقہ میں ہندو اور بدھ مذہب راءج تھے ۔ اگرچہ اس علاقہ پر آٹھویں صدی عیسویں میں مسلمانوں کا قبضہ ہوچکا تھا اور یہاں کے لوگ عربوں کے دور ہی میں اسلام قبول کرچکے تھے ۔ تاہم سیتھیوں کی قدیم روایات اور کہانیاں زندہ رہیں اور سینہ با سینہ منتقل ہوتی رہیں ۔ سولویں صدی عیسویں میں جب اس علاقہ پر بلوچ اور بروہیوں کا قبضہ ہوا ۔ جو اس ہی سرزمین کے فرزند یا قدیم جاٹوں کی باقیات تھے ۔ قدیم روایات اور کہانیاں جو زندہ رہیں مگر جب انہوں نے عرب سے آنے کا دعویٰ کیا تو اس علاقہ کو انہوں نے ہندو راجاؤں سے چھینے کا دعویٰ کیا تاکہ ان کے عرب نژاد ہونے کو تقویت پہنچے ۔

تہذیب و ترتیب

(عبدالمعین انصاری)

اس تحریر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں